سندھ ہائیکورٹ نے پی پی رہنما اور صوبائی وزیر شرجیل میمن کی نظر ثانی کی درخواست منظور کرتے ہوئے ان کا نام مستقل ای سی ایل نے نکالنے کا حکم دیا ہے۔

 

سندھ ہائیکورٹ میں پی پی رہنما اور صوبائی وزیر شرجیل انعام میمن کا نام ای سی ایل سے نکلانے کی نظر ثانی کی درخواست کو عدالت نے منظور کرتے ہوئے ان کا نام مستقل بنیادوں پر ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم دیدیا ہے۔ عدالت عالیہ کے جج کے کے آغا کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے شرجیل میمن کی درخواست پر فیصلہ سنایا۔

درخواست کی سماعت پر شرجیل میمن کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ عدالت نے ضمانت منظور کرتے وقت نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا حکم دیا تھا، شرجیل میمن کو ملک سے باہر جانے کے لیے بار بار اجازت لینا پڑتی ہے، وہ ٹرائل کورٹ میں باقاعدگی سے پیش ہو رہے ہیں، عدالت سے استدعا ہے کہ ان کا نام مستقل ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم دیا جائے۔ ،

اس موقع پر نیب اور وفاقی حکومت کے وکیل نے بھی نام شرجیل میمن کا نام مستقل بنیادوں پر ای سی ایل سے خارج کرنے کی مخالفت نہ کی۔

عدالت نے فریقین کا مؤقف سننے کے بعد شرجیل میمن کی نظر ثانی درخواست منظور کرتے ہوئے صوبائی وزیر کا نام مستقل بنیادوں پر ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے کہ شرجیل میمن ودیگر کے خلاف محکمہ اطلاعات میں پونے 6 ارب روپے کی کرپشن کا ریفرنس دائر ہے۔

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *