اسلام آباد : انسداد دہشت گردی کی عدالت نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی عبوری ضمانت میں 12 ستمبرتک توسیع کردی۔

اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں چیرمین پی ٹی آئی عمران خان کے خلاف دہشت گردی کے مقدمے کی سماعت ہوئی۔ انسداد دہشت گردی عدالت کے جج راجہ جوادعباس کیس نے سماعت کی ، سابق وزیر اعظم عمران خان انسداددہشت گردی کی عدالت میں پیش ہوئے۔عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے دلائل دیئے ، جج نے کہا یہ ہر 10دن کے اندر کوئی دفعہ لگاتے رہیں گے، اگر کوئی سیکشن لگانے ہیں تو ابھی سے کرلیں۔ بابر اعوان نے پراسیکیوٹر سے مکالمے میں کہا کوئی دفعہ رہ تو نہیں گئی؟ جس پر جج راجہ جوادعباس کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے علاوہ سارے سیکشن قابل ضمانت ہیں، عمران خان کیخلاف درج مقدمہ میں جو دفعات ہیں ان میں ضمانت منظور کر لیتے ہیں۔  جج نے ریمارکس دیے پولیس اب ہر 10دن بعد دفعہ ایڈ کرتی ہے اور پراسیکیوٹر سے استفسار کیا آپ یہ بتا دیں کہ دفعہ 506 کیسے لگائی ہے۔ بابر اعوان نے سوال کیا کہ کیا عمران خان نے کسی کو جلانے قتل کرنے کی دھمکی دی ہے؟ ہمارے ساتھی شہید ہوئےہم نے عدالت نہیں چھوڑی، ساتھیوں کی شہادت پر آج تک کچھ نہیں ہوامگر سابق وزیر اعظم پر مقدمہ بنایا۔ عدالت نے سابق وزیر اعظم عمران خان کی عبوری ضمانت میں 12 ستمبرتک توسیع کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر وکلاکو حتمی دلائل دینے کی ہدایت کردی۔

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published.