پنجاب حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں زراعت کے شعبہ کیلئے مجموعی طور پر 53ارب 19کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز دی ہے ۔بجٹ دستاویزات کے مطابق 14ارب 77کروڑ روپے ترقیاتی مقاصد کے حصول پر خرچ کئے جائیں گے ۔ اس کے علاوہ زرعی شعبہ میںانسنٹو بیسڈ کراپ زوننگ کو فروغ دیا جائے گا جس کے تحت پنجاب کی زمینوں کے زرعی پوٹینشل کے مطابق زوننگ کے بعد کسانوں کو ضرورت کے مطابق سہولیات اورمراعات مہیا کی جائیں گی ۔آبپاشی کے شعبہ میں ڈرپ ایری گیشن اور سپرنکلر ایریگیشن کو فروغ دیا جائے گا ۔آئندہ مالی سال کے بجٹ میںزرعی اجناس کی پیداوار میں اضافے کیلئے ایک جامع پروگرام پی آر آئی اے ٹی کے نام سے متعارف کرانے کے منصوبے کی بھی تجویز دی گئی ہے جس کے تحت زرعی شعبہ کو جدیدبین الاقوامی ٹیکنالوجی سے ہم آہنگ کیا جا سکے گا اس مقصد کیلئے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں3ارب 65کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے ۔بجٹ دستاویزات کے مطابق ز رعی شعبے میں ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ کی اہمیت کے پیش نظر آئندہ مالی سال میں8نئے منصوبوں کا آغاز کرنے کی تجویز ہے جن میں دالیں ، مونگ پھلی اور بلیک بیری جیسی ہائی ویلیو فصلوں کی پیداوار میں اضافے کو ممکن بنایا جاسکے گا ۔

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published.