ملتان ایم این ایس زرعی یونیورسٹی میں پلانٹ فار لائف سوسائٹی اور گرین یوتھ موومنٹ کلب کے زیر اہتمام موسمی تبدیلیوں کے تناظر میں پلانٹیشن کے کردار کے موضوع پر سیمینار اور پوسٹر کے مقابلہ جات کا انعقاد کیا گیا ،جس میں مختلف نیشنل اور انٹرنیشنل یونیورسٹیوں کے طلباء و طالبات نے حصہ لیا ۔

سیمینار کے مہمان خصوصی وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر آصف علی (تمغہ امتیاز) جبکہ پروفیسر ڈاکٹر ابرار احمد،ڈاکٹر سلمان مبارک و دیگر بھی شریک ہوئے۔سیمینارسے خطاب کرتے ہوئےپروفیسر ڈاکٹر آصف علی نے کہا کہ یونیورسٹی کا کام سوسائٹیز کو موسمی تبدیلیوں سے نہ صرف روشناس کرانا بلکہ جدید ریسرچ کو اپنا کر ملک کی ترقی میں اپنا حصہ ڈالنا ہے۔

انہوں نےکہا کہ جامعہ زرعیہ ملتان پاکستان میں پہلے نمبر کی ماحولیاتی یونیورسٹی ہے جو کہ ایک اعزاز کی بات ہے ۔ڈاکٹر ابرار احمد نے کہا کہ ہمیں ایسے درخت لگانے چاہئیں جن سے کینسر کا علاج ممکن ہو ۔ڈاکٹر سلمان مبارک نے کہا کہ پلاسٹک اور پوسٹر کو ضائع مت کریں،ان کے متبادل استعمال سے شاپنگ بیگ اور دوسری اشیاء تیار کی جا سکتی ہیں اور ہمیں ماحولیاتی تبدیلیوں کے تناظر میں جدید ریسرچ کو اپنا کر اپنے ملک کو ترقی یافتہ ممالک میں شامل کرنا ہے ۔

ڈاکٹر مقرب علی انچارج (پی ایل ایس) نے شرکاء کو موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے ماحولیات اور زراعت پر پڑنے والے اثرات کےبارے میں بتایا۔طلباء طالبات نے پوسٹر کے مقابلہ جات میں حصہ لیا اور ماحولیات کی تبدیلیوں کو اجاگر کرنے کے لیے مختلف خاکے اور شاعری پیش کی ۔سیمینار میں کوآرڈینیٹر کلیہ زراعت پروفیسر ڈاکٹر شفقت سعید ،ڈاکٹر عبدالغفار ،ڈاکٹر تنویر احمد ،ڈاکٹر حافظ محکم ،ڈاکٹر نزر فرید سمیت دیگر فیکلٹی ممبران اور طلبہ و طالبات کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published.