انچارچ ہارٹیکلچر ریسرچ انسٹیٹیوٹ برائے فلوری کلچر اینڈ لینڈ سکیپنگ راولپنڈی ڈاکٹر ریاض علی شاہ نے کہا ہے کہ گلبانی و چمن آرائی ایک منافع بخش پیشہ ہے،دنیا میں پھولوں کا تجارتی حجم اربوں ڈالرز پر محیط ہے ،گلبانی و چمن آرائی کے پیشے کی بدولت خاطر خواہ منافع حاصل کیا جاسکتا ہے ، گلبانی اور چمن آرائی کے ذریعے خوبصورتی کے ساتھ ساتھ موسمیاتی تبدیلیوں پر مثبت اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔

 

ان خیالات کااظہار انہوں نے ہارٹیکلچر ریسرچ انسٹیٹیوٹ برائے فلوری کلچر اینڈ لینڈ سکیپنگ راولپنڈی میں تربیتی کورس کے اختتام پر شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔تربیتی کورس میں شرکاءکو جدید سائنسی بنیادوں پر نرسری بنانے، پھول دار پودوں کی افزائش نسل اور آرائشی پودوں کی نشوونما کے جدید طریقوں کے بارے میں تربیت دی گئی۔

اس کورس کے ذریعے تربیت پانے والوں میں گلبانی و چمن آرائی کے پودوں کا کاروبار کرنے والے اور نیا کاروبار شروع کرنے کے خواہاں افراد شامل تھے۔

ڈاکٹر ریاض علی شاہ نے مزید کہا کہ ہارٹیکلچر ریسرچ انسٹیٹیوٹ تحقیق کے ساتھ ساتھ تربیتی کورسز کے ذریعے بھی کردار ادا کر رہا ہے۔ یہاں جدید گرین ہا و س اور نرسری بنا کر اعلیٰ معیار کے پودے تیار کیے جاتے ہیں ، ضرورت اس امر کی ہے کہ اس شعبہ کو سائنسی بنیادوں پر استوار کیا جائے ۔

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published.