پنجاب حکومت نے کھاد و گندم کی ذخیرہ اندوزی اور سمگلنگ کیخلاف کریک ڈائون کا فیصلہ کیا ہے، اس سلسلے میں چیف سیکرٹری کامران علی افضل نے تمام ڈپٹی کمشنرز کو ہدایات جاری کر دی ہیں،یہ ہدایات سول سیکرٹریٹ میں منعقد ویڈیو لنک اجلاس کے دوران جاری کی گئیں، چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ کھاد کی گرانفروشی اور ذخیرہ اندوزی میں ملوث افراد کیخلاف سخت کارروائی کی جائے گی،صرف ڈیکلیئرڈسٹاک ہی گودام میں رکھنے کی اجازت ہوگی جبکہ غیرقانونی طور پر کھاد ذخیرہ کرنے والوں کیخلاف مقدمات درج اور سٹاک ضبط کیا جائیگا، انہوں نے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی کہ ضبط شدہ سٹاک مقررہ قیمت پر مارکیٹ میں فروخت کر دیا جائے،چیف سیکرٹری نے واضح کیا کہ یوریا کی ڈی اے پی کیساتھ مشروط فروخت اوررات آٹھ بجے کے بعد کسی دکان پر بھی کھاد کی فروخت کی اجازت نہیں ہوگی،انہوں نے کہا کہ کھادو گندم کی سمگلنگ اورذخیرہ اندوزی سے متعلق انتظامیہ کو معلومات فراہم کرنے کیلئے سپیشل برانچ کو فرائض تفویض کر دیئے گئے ہیں،آن لائن پورٹل پر کھاد کی ترسیل و سٹاکس کی مانیٹرنگ اورسمگلنگ کی روک تھام کیلئے سرحدی اضلاع میں گندم و کھاد کی نقل و حمل پر کڑی نظر رکھی جائے، انہوں نے فلور ملوں میں گندم کی پسائی اور آٹے کی ترسیل کے عمل کی مکمل مانیٹرنگ کرنے سے متعلق بھی ہدایات جاری کیں،اجلاس میںزراعت وخوراک کے محکموں کے سیکرٹریز، کمشنر اور ڈپٹی کمشنر لاہور نے شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published.