مکوآنہ  کھاد اور ڈی اے پی کیمہنگائی کے خلاف پاکستان کسان اتحادنے 14 فروری سے ملک گیر کسان احتجاج کا اعلان کردیاہے۔

آل پاکستان کسان اتحاد کے ترجمان کا کہنا ہے کہ گندم کی کاشت کے لیے کھاد نہیں ملی اور اب حکومت نے منیبجٹ میں زرعی اشیا پر نئے ٹیکس لگا دیے ہیں، کسان اتنے پریشان ہیں کہ ان کے بچے اسکول نہیں جاسکتے، اس لیے بچوں کے ساتھ احتجاج کریں گے۔خالد کھوکھر کا کہنا تھا کہ کھاد اور ڈی اے پی کی کمی کی وجہ سے گندم کی پیداوار میں کمی آئیگی اور اس سال بھی گندم درآمد کرنا پڑے گی

By admin

Leave a Reply

Your email address will not be published.