December 3, 2021

گندم کی بھر پور پیداوارکیلئے کاشتکار باکفایت آبپاشی یقینی بنائیں ،محکمہ زراعت

فیصل آباد۔ :محکمہ زراعت توسیع فیصل آباد کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر خالد اقبال نے  کہا ہے کہ پانی کی کمی گندم کی فصل کو بری طرح متاثر کرتی ہے، بھر پور پیداوارکیلئے کاشتکار باکفایت آبپاشی یقینی بنائیں تاکہ فصل کو غذائی اجزا کی فراہمی کو متاثر ہونے سے بچایاجاسکے۔ یہ بات انھوں نے ایک ملاقات میں کہی۔

انھوں نے بتایاکہ گندم کو 3سے 4 مرتبہ پانی کی ضرورت ہوتی ہے خاص کر نازک مراحل میں کھیتوں کو پانی دینے میں کسی کوتاہی کا مظاہرہ نہیں کرنا چاہیے۔ انہوں نے  کہا کہ گندم کی کاشت کے بعد پہلی آبپاشی جھاڑ بناتے وقت کرنی چاہیے کیونکہ جب پودا جھاڑ بنانے کاعمل شروع کرتاہے تو پہلے 18 سے 25 دن بعد اس کو پانی کی اشد ضرورت ہوتی ہے، اگر اس موقع پر پانی نہ دیاجائے تو مستقل جڑوں کی نشو ونما ٹھیک  نہیں ہوتی  جس سے پودا کمزور، شگوفے کم اور بعد ازاں سٹوں کی تعداد بھی انتہائی کم رہ جاتی ہے جس کے پیداوار پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

  خالد اقبال نے کہا کہ کاشتکار دوسری آبپاشی گوبھ کی حالت میں، تیسری آبپاشی دودھیا حالت میں اور چوتھی آبپاشی اس وقت کریں جب دانہ گوند نما حالت میں ہو۔ انہوں نے کہاکہ اس ضمن میں ماہرین زراعت یا محکمہ زراعت کے فیلڈسٹاف سے بھی معاونت حاصل کی جاسکتی ہے۔